مرجع عالی قدر اقای سید علی حسینی سیستانی کے دفتر کی رسمی سائٹ

فتووں کی کتابیں » توضیح المسائل جامع

مبطل دہم: کھانا پینا ← → مبطل ہشتم: دنیوی کام کے لیے جان بوجھ کر رونا

مبطل نہم: فعل کثیر اور ایسے کام کا انجام دینا جو نماز کی شکل خراب کر دے

مسئلہ 1390: ایسا کام جو نماز کی شکل خراب کر دے مثلاً اچھلنا وغیرہ نماز کو باطل کر دیتا ہے خواہ جان بوجھ کر ہو یا بھول كر یا بے اختیاری طور پر پیش آئے۔

مسئلہ 1391: ہاتھ سے اشارہ کرنا یا کسی کو کوئی بات سمجھانے کے لیے ہاتھ کو پیر یا دوسرے ہاتھ پر مارنا، زمین سے کوئی چیز اٹھانا جیسے قرآن یا دعا کی کتاب، بچے کو گود میں لینا، موذی کیڑے مکوڑے کو مارنا ، سجدہ گاہ طاق وغیرہ سے اٹھانے کے لیے تھوڑی مقدار چلنا مندرجہ ذیل شرائط کے ساتھ حرج نہیں رکھتا۔

1
۔ نماز کی شکل خراب نہ ہو ۔

2
۔ نماز گزار قبلہ سے انحراف پیدا نہ کرے ۔

3
۔ حرکت کی حالت میں قرائت اور نماز کے اذکار کو نہ پڑھے۔

4
۔ موالات اور نماز کے صحیح ہونے کے تمام شرائط کی رعایت کرے۔

مسئلہ 1392: اگر نماز کے دوران اس طرح سے خاموش ہو جائے کہ عرفاً نہ کہیں کہ نماز پڑھ رہا ہے تو اس کی نماز باطل ہے۔

مسئلہ 1393: اگر نماز کے دوران کوئی کام انجام دے یا کچھ دیر تک خاموش ہو جائے اور شک کرے کہ نماز کی شکل خراب ہوئی یا نہیں تو لازم ہے کہ نماز کو دوبارہ پڑھے لیکن بہتر ہے کہ پہلے نماز کو تمام کرے اس کے بعد دوبارہ پڑھے۔
مبطل دہم: کھانا پینا ← → مبطل ہشتم: دنیوی کام کے لیے جان بوجھ کر رونا
العربية فارسی اردو English Azərbaycan Türkçe Français