مرجع عالی قدر اقای سید علی حسینی سیستانی کے دفتر کی رسمی سائٹ

سوال و جواب » خمس

۶۱ سوال: پینشن پر جو تنخواہ سے کم کر کے ملتی ہے ،خمس واجب ہے؟
جواب: اگر سرکاری نوکری کرنے والے شخص کی کچھ مقدار تنخواہ کا اس کی رضایت سے کم کرنا اگر اس معنی میں ہو کہ حکومت اس پیسے کو اپںنی ملکیت میں لیتی ہو تو اس پر خمس واجب نہیں ہے مگر اس کے قبض کرنے اور پورے ایک سال گذرنے کے بعد (صرف ایک اکاونٹ سے دوسرے اکاونٹ میں ٹرانسفر کرنا کافی نہیں ہے، جب تک خود پیسہ نکال کر جمع نہ کیا جایۓ ) لیکن اگر قرض کے عنوان سے حکومت کے پاس ہو اور بعد میں رٹایر ہونے کے بعد آہستہ آہستہ اسے واپس کرتے ہیں تو جتنی مقدار کم کیا ہے اس کا خمس واجب ہے پس جتنی مقدار جو ہر مہینے کم کرتے ہیں اس کا خمس ہر مہینے دے سکتا ہے، یا پھر پوری تنخواہ کا ہر مہینے خمس دے یہاں تک کے کم کی جانے والی مقدار کا خمس ادا ہو جایۓ۔
۶۲ سوال: فنڈ بر خمس واجب ہے؟
جواب: اگر حکومت اپنی طرف سے دے رہی ہے تنخواہ میں سے کاٹا ہوا نہیں ہے تو اگر ملنے کے بعد خمس کی تاریخ تک باقی رہے اور ضروریات زندگی میں خرچ نہ ہو تو اس کا خمس واجب ہے۔
۶۳ سوال: اگر خمس کی تاریخ بھول جایۓ تو کیا حکم ہے؟
جواب: اگر انسان کے لیۓ‌ کویئ سود حاصل ہو اور شک کرے کہ اس کے خمس کی تاریخ سود حاصل ہونے سے پہلے تھی کہ اس بنا پر اس کے لیئے جایز ہے کہ اسے آیندہ گیارہ مہینے میں خرچ کرے ، یا چند دن بعد اس کے خمس کی تاریخ ہے اور اس تاریخ میں اس سود کا خمس اسے دینا ہوگا تو اس صورت میں پہلی صورت پر بنا رکھنا جایز ہے ۔
لیکن اگر سال کے بیچ میں نقصان ہو اور پھر سود حاصل ہو اور پھر شک کرے کہ خمس کی تاریخ گزرنے کے بعد سود حاصل ہوا ہے یا پہلے تو اس صورت میں ن‍‍‍قصان کو فایدے سے کم نہیں کر سکتا ، اور یہاں دوسری مختلف صورتیں ہیں۔
ایک نیا سوال بھیجنے کے لیے یہاں کلیک کریں
العربية فارسی اردو English Azərbaycan Türkçe Français