مرجع عالی قدر اقای سید علی حسینی سیستانی کے دفتر کی رسمی سائٹ

سوال و جواب » حج

۱ سوال: کیا عورت مرد کی طرف سے اور مرد عورت کی طرف سے نیابتی حج کر سکتے ہیں؟
جواب: ہاں ایک دوسرے کی طرف سے نیابتی حج انجام دے سکتے ہیں۔
۲ سوال: نیابتی حج میں طواف نساء کا کیا فائدہ ہو سکتا ہے جبکہ شوہر و بیوی مر چکے ہیں؟
جواب: نیابتی حج میں طواف نساء کا فائدہ نایب شخص کو ہوگا، مر نے والوں کو نہیں۔
۳ سوال: عمرہ مفردہ پر جانے والا کس میقات سے احرام باندھے گا، اگر اس کا سفر ہوائی ہو تو کیا وہ جدہ سے احرام باندھ سکتا ہے؟
جواب: جدہ سے نذر کرنے کے ذریعے احرام باندھ سکتا ہے، اور نذر کے لیٔے خاص صیغہ یا اس کے ترجمے کا زبان پے جاری کرنا ضروری ہے۔
۴ سوال: ۲۶۔ جس نے آج تک خمس نہ نکالا ہو اگر وہ عمرہ پر جا رہا ہو تو کیا عمرہ کے مخارج کا خمس نکال کر باقی کا حساب بعد میں کر سکتا ہے؟
جواب: ایسا کر تو سکتا ہے لیکن خمس میں تاخیر کرنا گناہ ہے۔
۵ سوال: اگر کوئی حج پر جانے کی خاطر اپنے زیورات بیچ رہا ہے تو کیا ان پر خمس واجب ہیں؟
جواب: جو اس کی قیمت میں اضافہ ہوا ہے اگر ہدیہ نہ ہو تو وہ سال کے منافع میں حساب ہوگا اور اگر وہ منافع خمس کے دن تک خرچ نہ ہوا ہو تو اس پر خمس واجب ہو جائے گا۔
۶ سوال: مہربانی کرکے یہ بتائیں کہ طواف میں سات چکر ہی کیوں لگائے جاتے ہیں؟
جواب: تمام احکام شرعی کی علتوں کا ہمیں علم نہیں ہے،جو کچھ شارع مقدس (اللہ و رسول (ص) نے حکم دیا ہے اس کا بجا لانا ضروری ہے۔
۷ سوال: ۲۱۔ آپ کی حج کی کتاب (مناسک حج) کے مسئلہ ۲۴۲ کے مطابق علاج کی غرض سے حج کے اعمال اور ارکان کے دوران طبی بیلٹ سے استفادہ کیا جا سکتا ہے تو کیا یہ حکم کمر کی مہروں کو کنٹرول کرنے والی بیلٹ پر بھی جاری ہو سکتا ہے؟
جواب: ڈیسک کے لیے طبی بیلٹ کا استعمال کیا جا سکتا ہے۔
۸ سوال: ۵ سال سے میری والدہ پر حج واجب ہے مگر وہ تنہا جانے کے خوف سے اور اس امید پر کہ اگلے سال والد صاحب کے ساتھ جائیں گی، حج میں تاخیر ہوتی رہی۔ اب جبکہ بعض اسباب کی بناء پر والد صاحب بھی ان کے ساتھ نہیں جا سکتے تو کیا انہیں حج پر جانا چاہیے یا نہیں؟
جواب: عورت کے حج پر جانے کے لیے شوھر کا ساتھ ہونا شرط نہیں ہے،اگر ان پر حج واجب ہے تو انہیں جانا چاہیے۔
۹ سوال: اگر کوئی طواف یا سعی نہ کرے اور موالات ختم کیے بغیر دوبارہ شروع کرے تو اس کا کیا حکم ہے؟ آپ نے لکھا کہ اگر جاھل مقصر ہو تو کوئی حرج نہیں ہے،اور جاھل قاصر و مقصر سے کیا مراد ہے؟
جواب: جاھل مقصر وہ ہے جس نے شرعی مسائل سیکھنے میں کوتاہے کی ہو اور اگر اس نے کوتاہی نہیں کی ہے تو وہ جاھل قاصر ہے۔
۱۰ سوال: اگر کوئی جدہ سے احرام باندھنے کے بعد مکہ چلا جائے اور یاد آئے کہ وہ موقف جانا بھول گیا ہے تو اسے کیا کرنا چاہیے؟ کفارہ دینا چاہیے یا جحفہ جاکر دوبارہ احرام باندھنا چاہیے؟
جواب: اسے میقات جاکر دوبارہ احرام باندھنا چاہیے اور اگر ایسا کرنا ممکن نہ ہو تو حرم سے باہر نکل کر احرام باندھے گا اور اگر یہ بھی ممکن نہ ہو تو جہاں ہے وہیں پر دوبارہ احرام باندھ سکتا ہے۔
ایک نیا سوال بھیجنے کے لیے یہاں کلک کریں
العربية فارسی اردو English Azərbaycan Türkçe Français