مرجع عالی قدر اقای سید علی حسینی سیستانی کے دفتر کی رسمی سائٹ

سوال و جواب » حج ۔ حلق و تقصیر

۱ سوال: اگر کسی نے اپنے سر میں نقلی بال نکلنے کے لیے آپریشن کروایا ہو اور حج پر گیا ہو جبکہ وہ اس کا پہلا حج بھی ہو تو کیا سر مونڈھوانا اس کے لیے واجب ہے؟
جواب: پہلے حج میں سر مونڈھوانا احتیاط کی بناء پر ہے، آپ الاعلم فالاعلم کی رعایت کے ساتھ کسی اور مرجع کی طرف رجوع کر سکتے ہیں لیکن اگر کسی نے بال لگوائیں ہوں اور اس کے بال بڑھ نہیں رہے ہوں تو اس کا غسل باطل ہوگا، اسی طرح اس کے مسح کے بارے میں بھی ہے کہ اگر وہ وضو میں پاک جلد یا طبیعی بال پر مسح نہ کر سکے تو اس کا وضو باطل ہوگا۔
۲ سوال: اگر حاجی سر مونڈواتے کے وقت زخمی ہوجائے اور خون نکل آئے تو کیا حکم ہے؟
جواب: اگر اس نے جان بوجھ کر ایسا نہ کیا ہو تو کوئی حرج نہیں ہے۔
ایک نیا سوال بھیجنے کے لیے یہاں کلک کریں
العربية فارسی اردو English Azərbaycan Türkçe Français