مرجع عالی قدر سید علی حسینی سیستانی کے دفتر کی معلومات پہنچانے کی سائٹ

سوال و جواب » حیض

۱ سوال: عورتوں کے یائسہ ہونے کی کیا عمر ہے؟
جواب: حیض کے حساب سے ساٹھ سال اور عدہ کے لحاظ سے پچاس سال، حیض کا خون بند ہونے کے فرض کے ساتھ ۔
۲ سوال: کیا حائضہ سجدے والی آیتوں کے علاوہ سات سے زیادہ آیتیں پڑھ سکتی ہے؟ اگر یہ جایز یا مکروہ ہو تو کراہت کے کیا معنی ہیں؟
جواب: سات آیت سے زیادہ پڑھنا مکروہ ہے جبکہ آیات سجدہ اصلا نہیں پڑھ سکتی۔ ہیاں کراہت سے مراد ثواب کا کم ہونا ہے۔
۳ سوال: حج کے موسم میں بعض خواتین ماہانہ عادت کو آگے بڑھانے کے لیے
دوائیاں کھاتی ہیں پھر بھی اپنی عادت کے ایام میں بطور منقطع خون دیکھتیں ہیں کیا وہ حیض ہے؟
جواب: اگر تین دن لگاتار ہو تو اگر چہ رحم کے اندر ہو وہ حیض کا خون ہے اور اگر ایسا نہ ہو تو حیض نہیں ہے۔
۴ سوال: حائضہ کے لیے سورہ فصلت اور سجدہ والی آیتیں پڑھنے کا کیا حکم ہے؟
جواب: سورہ پڑھنے میں کوئی حرج نہیں ہے صرف سجدہ والی آیت نہیں پڑھ سکتی۔
۵ سوال: میری بیٹی بارہ سال کی ہے اب اس کی ماہواری شروع ہوئی ہے لیکن خون مسلسل آ رہا ہے اور چونکہ وہ مدرسہ جاتی ہے اور اس کی عمر کم ہے، ہر نماز کے لیے غسل نہیں کر سکتی، ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ شروع میں ایسا ہوتا ہے۔ اس کی نماز کا کیا حکم ہے؟
جواب: اگر وہ خون دس روز سے زیادہ نہ آئے تو حیض ہے، اگر اس سے زیادہ ہو اور ایک جیسا ہو، اس کی ہم سن رشتہ دار لڑکیوں کی مقدار میں ہو تو اتنا حیض، بقیہ استحاضہ ہے اور اگر ایک جیسا نہ ہو تو جن میں حیض کی صفات ہوں وہ حیض اور بقیہ استحاضہ ہے اور اگر رشتہ دار لڑکیوں کی عادتیں الگ الگ ہوں تو سات دن حساب کر سکتی ہے اور اگر استحاضہ میں خون کم ہو اتنا کہ روئی نہیں ڈوبتی ہو تو غسل ضروری نہیں ہے وضو کافی ہے لیکن ہر نماز کے لیے وضو کرنا ضروری ہے اور اگر روئی ڈوب جاتی ہے مگر خون اس سے باہر نہیں آتا تو ہر نماز کے لیے دن کا ایک غسل کافی ہے احتیاط واجب کی بناء پر لازم ہے کہ ہر نماز کے لیے وضو بھی کرے اور اگر خون سے روئی ڈوب جائے تو صبح، ظہرین اور مغربین کے لیے الگ الگ غسل واجب ہے۔
۶ سوال: حائضہ عورت امام رضا علیہ السلام کی ضریح سے کس قدر نزدیک ہو سکتی ہے؟
جواب: ضریح کے آس پاس کے شبستانوں میں جانے میں کوئی حرج نہیں ہے، احتیاط واجب کی بناء پر ضریح والے حصہ سے دور رہنا چاہیے۔
۷ سوال: کیا حیض کے دنوں میں حمام جایا جا سکتا ہے؟
جواب: کوئی حرج نہیں ہے۔
۸ سوال: حیض کے ساتویں دن اس خیال سے غسل کیا کہ اب خون نہیں آئے گا اور ہاتھ، پیر میں مہندی لگانے کے بعد خون دوبارہ آنا شروع ہو گیا، مہندی رنگ لا چکی ہے حکم بتائیں؟
جواب: حیض کی حالت میں مہندی لگانے میں کوئی حرج نہیں ہے۔
۹ سوال: عورتوں کے لباس دھونے کے بعد اس پر باقی رہ جانے والے پیلے دھبہ کیا نجس ہیں؟ اور وہ دھبے جو حیض کے بعد باقی رہ جاتے ہیں ان کا کیا حکم ہے؟
جواب: اگر صرف رنگ ہو اس میں گاڑھاپن نہ ہو تو وہ خون کا دھبہ نہیں ہے اور لباس پاک ہے۔
۱۰ سوال: تولیہ یا لباس جو حیض کے دوران استعمال میں تھا، غسل کے بعد کیا ان کو استعمال نہیں کیا جا سکتا وہ نجس ہیں؟
جواب: پاک ہیں انہیں استعمال کیا جا سکتا ہے۔
ایک نیا سوال بھیجنے کے لیے یہاں کلک کریں
العربية فارسی اردو English Azəri Türkçe Français