مرجع عالی قدر اقای سید علی حسینی سیستانی کے دفتر کی رسمی سائٹ

سوال و جواب » نرس

۱ سوال: ایک مسلمان نرس ایک کلینک میں کام کرتی ہے اور اپنے مشغلہ کے پیش نظر مسلمان و غیر مسلمان مرد کو ہاتھ لگاتی ہے کیا یہ عمل اس کے لیے جایز ہے؟ دوسری صورت یہ ہے کہ کام کرنا اس کی مجبوری ہے اور کام ملنا آسان نہ ہو تو کیا اس فرض کے ساتھ، مسلمان و غیر مسلمان میں کچھ فرق ہوگا؟
جواب: عورت کے لیٔے کسی نامحرم کو ہاتھ لگانا جایز نہیں ہے چاہے وہ مسلمان ہو یا غیر مسلمان، مگر یہ کہ دستانہ پہنے۔
ایک نیا سوال بھیجنے کے لیے یہاں کلک کریں
العربية فارسی اردو English Azərbaycan Türkçe Français